جمہوریت اورفلاحی معاشرہ

فلاحی معاشرہ

ایک فلاحی معاشرہ ایسا معاشرہ ہے جس میں لوگوں کے معیارِزندگی کے اہم معاملات، تعلیم اور صحت سرکاری ا نتظام سے انجام پاتے ہیں۔ سرکاری فو ا ئد سب کو ملتے ہیں یہ سب کے لئے ہیں۔ ایک فلاحی معاشرے میں حکام وسائل کی ایسی تقسیم کرتے ہیں کہ تمام شہریوں کورہائش،خوراک، طبی امداد اور تعلیم جیسی بنیادی ضروریات میسر ہوسکیں۔

نارویجن فلاحی معاشرے کو ایک فلاحی ریاست کہا جاتا ہے کیونکہ فلاح و بہبود کے اصل ذمہ دارسرکاری ادارے،ریاست اور بلدیات ہیں۔

فلاحی ریاست کا سارا دارومدار زیادہ تر شہریوں کی ٹیکس اور دوسرے محصولات کی ادائیگیوں پر ہے ۔ اس کے علاوہ ریاست برآمدات مثلا تیل اور گیس سے ہونے والی آمدنی بھی فلاح و بہبود کے اخراجات پورے کرنے کے لئے استعمال کرتی ہے۔

اگرچہ فلاح وبہبود کے اصل ذمہ دار سرکاری ادارے ہیں تاہم رفاہی تنظیمیں اورعام شہری بھی بہت اہم کردار ادا کرتے ہیں۔

حقائق

ایک فلاحی معاشرہ

  • فلاحی معاشرہ ایک ایسا معاشرہ ہے جس میں فلاحی معیار بہت اعلیٰ اور مکمل مساویانہ ہوتا ہے۔
  • فلاح و بہبود پر بہت خرچہ آتا ہے۔ ناروے میں مقیم تمام افراد ٹیکس اور محصولات کی ادائیگی کے ذریعے فلاح و بہبود میں حصّہ لیتے ہیں۔