تعلیم اورقابلیت

ثانوی تعلیم

ثانوی تعلیم کے بارے میں کچھ حقائق

  • تمام نوجوان جو نوشک ابتدائی سکول یا اس کے برابرتعلیم مکمل کر لیں وہ تین سالو ں کی ثانوی تعلیم کا حق رکھتے ہیں۔
  • نوجوان کو ثانوی تعلیم 24 سال کی عمر پوری ہونے تک لازماً مکمل کرنی چاہیئے۔
  • ضلعی بلدیہ ثانوی تعلیم کی ادائیگی کرتی ہے اوراس بات کی پابند ہے کہ وہ تمام مستحق افراد کو یہ تعلیم فراہم کرے ۔
  • ثانوی تعلیم میں اعلٰی تعلیم کی تیاری کی شاخیں اور پیشہ وارانہ تعلیم کی شاخیں ہوتی ہیں۔

Elektriker Rørlegger Tømrer

حقائق

ابتدائی ا ور ثانوی سکول

نوعمر تقر یباً 16سال کی عمر میں ابتدائی سکول مکمل کر لیتے ہیں۔ صرف ابتدائی سکول مکمل کر نے والے اشخاص کے لئے روزگار کے مواقع زیادہ نہیں ہوتے اس لیے ا کثر ثانوی سکول کی تعلیم شروع کرتے ہیں۔

سر کاری ثانوی سکولوں کے علاوہ کچھ نجی سکول بھی ہیں۔ نجی سکولوں میں خاندان ادائیگی کرتاہے۔ تاہم وہ صرف ذاتی حصّہ کی ادائیگی کرتے ہیں جب کہ باقیماندہ اخراجات ریاست ادا کرتی ہے۔

آجکل معاشرے میں بہت سے پیشوں اور روزگاروں کے لئے ثانوی یا اعلٰی تعلیم ضروری ہے۔ فلاحی معاشرے کے لئے بھی یہ بہت اہم ہے کہ زیادہ سے زیادہ لوگ تعلیم حاصل کریں۔ اس طرح ہم معاشرے کی اقدار کے حصول اور روزگار کے نئے مواقع فراہم کر سکتے ہیں۔ لوگوں میں اعلٰی تعلیمی سطحٰ کے بغیر فلاحی معاشرے اور اس کے فلاحی فوا ئد کو بحال رکھنا مشکل ہے۔

ثانوی سکولوں کی تعلیم مفت ہے۔

طلباء سکول سے کتابیں مستعار لیتے ہیں لیکن لکھنے کی اشیاء یا دوسرا سامان انہیں خود خریدنا پڑتا ہے۔